23

فرانسیسی صدر نے کورونا وائرس کے باعث عوام کو ٹیکسز اور بل معاف کردئے


پیرس ؛کرونا وائرس کے باعث فرانس میں لاک ڈاوٴن حکومت نے عوام کیلئے بڑا ریلیف دیتے ہوئے کرایہ، ٹیکس اور گھریلو بل معاف کر دیئے۔ تفصیلات کے مطابق پوری دنیا کی طرح فرانس بھی کرونا وائر س نے پنجے گاڑ لئے ہیں جس کے بعد حکومت نے عوام کے گھریلو بل ، ٹیکسز اور گھر کا کرایہ معاف کر دیا ہے۔ فرانس کے صدر میکرون نے کہا ہے کہ ملک اس وقت حالات جنگ میں ہے۔
فرانس میں لاک ڈاوٴن گزشتہ روز دوپہر کے وقت کیا گیا۔ حکومت کی جاری کرد ہ ہدایت کے مطابق اگر کوئی شخص گھر سے باہر کتے کو سیر کراتے یا کسی غیر ضروری کام سے پکڑا گیا تو اسے 38 یورو کا جرمانہ کیا جائے گا۔
فرانس کے صدر کا کہنا تھا کہ ملک بھر میں لاک ڈاوٴن کر دیا گیا ہے۔ کوئی شہری گھر سے باہر نہ نکلے اور گھر سے باہر صرف اس وقت نکلیں جب آپ کو کھانے کیلئے خوراک ، ادویات اور اکیلے ورزش کرنا ہو۔ان تمام احکامات کا اعلان فرانسیسی صدر نے قوم سے خطاب کے دوران کیا۔
 فرانس میں یہ لاک ڈاوٴن دو ہفتوں تک جاری رہے گا ساتھ ہی ساتھ حکومت نے اپنے بارڈرز کو آمدورفت کیلئے بند کر دیا ہے۔ کرونا وائرس کے باعث فرانس میں 127 افراد کی ہلاکت ہو چکی ہے اور 5 ہز ار سے زائد افراد اس خطرناک وائرس سے متاثر ہو چکے ہیں۔ 
جن میں سے 1400 افراد کو ابھی بھی آئیسولیشن وارڈ میں رکھا گیا ہے۔دوسری جانب الجیریا نئے کرونا وائرس کے پھیلاؤ کو روکنے کے لئے کل منگل سے فرانس کے ساتھ اپنے تمام فضائی اور سمندری راستے بند کرے گا۔
وزیراعظم کے دفتر کی جانب سے گزشتہ روز جاری کیے گئے ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ عبدالعزیز دجیراد نے اپنے فرانسیسی ہم منصب ایڈورڈ فلپے کے ساتھ مشاورت کے بعد تمام فضائی اور سمندری مسافر سروسز کی غیر معمولی معطلی کا حکم دیا ہے۔
 بیان میں مزید کہا گیا ہے کہ بہرحال ایسے فرانسیسی شہریوں کے لئے جو الجیریا میں اس وقت موجود ہیں یا ایسے الجیرین شہری جو فرانس کے سفر پر ہیں ، کے لئے اپنے ممالک میں واپس جانے کی سکیم ہو گی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں